کمر ،سر اور ٹانگوں کے درد کا مستقل علاج

اسم ذات کی تاثیر بہت ہی زیادہ ہے کتنے لوگ ایسے آئے جو سخت مایوسی تناؤ ، کھنچاؤ،دباؤ،انگزائٹی، ٹینشن اور ذہنی الجھاؤ کا شکار تھے ۔ یہ تو آج ہمارے معاشرے میں سرایت کر چکی ہے حدسےزیادہ یہ بیماریاں ہمارے معاشرے میں پائی جاتی ہیں اور اس چیز کا بہت زیادہ نقصان ہوتا ہے اور ہمارا معاشرہ اس چیز میں بہت زیادہ ڈوبا ہوا ہے اگر آپ چاہتے ہیں کہ یہ چیز ختم ہو جائے اور آپ چاہتے ہیں کہ یہ چیز دور ہو جائے تو اس کے دو راستے ہیں ایک ہے کہ ایسی گولیاں کھائے جس سے نیند آجائے دماغ سو جائے اور آخر کار وہ گولیاں ن ش ے کی صورت اختیار کر لیں اور اس سے دماغ یاداشت میموری ہر چیز ختم ہوجاتی ہے اور انسان ایک زندہ لا ش ہے چلتی پھرتی ایک یہ ہے کہ اپنی مشکل میں اللہ کو آواز دیں اس کی مثال جب بھی کوئی بچہ پریشان ہوتا ہے وہ فورا ماں کو پکارتا ہے ہم جب بھی پریشان ہوں تو ہم کہیں اللہ امام غزالی رحمۃ اللہ علیہ نے فرمایا میں نے اللہ کو پانا بچے سے سیکھا کہ بچے کو جب کوئی مشکل آتی ہے تو وہ کہتا ہے

اماں تو جب ہمیں کوئی مشکل آئے تو ہم فورا کہیں اللہ ۔جوڑوں کادرد(گنٹھیا،وجعِ مفاصل،آرتھرائٹس)ایک قدیم بیماری ہے۔دو ہڈیوں کے ملنے کے مقام کو جوڑ کہتے ہیں۔جسمِ انسانی میں تقریباً 206ہڈیاں ہیں جو ایک دوسرے سے مُنسِلک ہیں اورجوڑوں کے ذریعے ان ہڈیوں سے مل کر ہمارے جسم کا ڈھانچہ مکمل ہوتا ہے۔جوڑوں کےدرد کی علامات جوڑوں کےاندر عام حالات میں اوربِالخصوص چلنے پھرنےکےدوران درد ہونا،سُوجن، جِلد کا گرم ہوجانا،صبح کے وقت جوڑوں میں جکڑن ہونا وغیرہ۔جوڑوں کےدردکےاسباب کھانےپینےمیں بے احتیاطی، رَہَن سَہَن اور بیٹھنے کا غلَط انداز،وٹامن ڈی کی کمی ،جسم کے وزن میں غیر معمولی اضافہ،ایکسیڈنٹ وغیرہ میں ہڈیوں پر لگنے والی چوٹ،غیرمحتاط اندازمیں گاڑی یا موٹر سائیکل چلانااور وزن اٹھانا وغیرہ۔جوڑوں کادرداور یورک ایسڈ یورک ایسڈ کے سبب بھی جوڑوں بِالخُصوص پاؤں کے جوڑوں میں دردہوتاہے۔یورک ایسڈ ایک نارمل کیمیاوی مادہ ہے

جو کھانا پینا ہضم ہونے کے بعد پیدا ہوتا ہے اور پیشاب کے ذریعے جسم سے خارج ہوجاتا ہے۔گوشت اور بیکری آئٹمز زیادہ مقدار میں استعمال کرنے پر یورک ایسڈ کی پیداوار میں اضافہ ہوجاتا ہے جو پوری طرح جسم سے خارج نہیں ہوپاتا اور جمع ہونے لگتا ہے۔جب اس کی مقدار زیادہ ہوجائے تو یہ جوڑوں کے درمیان نمک کے دانوں کی شکل میں جمنے لگتے ہیں اور پھر نقل و حرکت کرتے ہوئے جوڑوں میں درد ہونے لگتا ہے۔یورک ایسڈ کی زیادتی گردوں اور دل کے امراض کاسبب بھی بن سکتی ہے۔پانی کم مقدار میں پینا بھی یورک ایسڈ کی زیادتی کا سبب ہے۔یورک ایسڈ میں اضافہ ایک ایسی بیماری ہے جسے انسان پرہیز کے ذریعے خود کنٹرول کرسکتا ہے اور ادویات کے ذریعے بھی اس کا علاج موجود ہے۔یورک ایسڈ میں اضافے کی علامات صبح اٹھ کر زمین پر پاؤں رکھتے ہی پنجوں میں اور پھر جسم کے مختلف جوڑوں میں تکلیف ہونے لگتی ہے۔جوڑوں کےدرد کے لئے تیر بہدف نسخہ:سَوْنٹھ(خشک ادرک):50گرام، سِمْلو:50گرام، میتھی دانہ:50گرام، سُوْرَنْجَان شِیْرِیں:50 گرام،مامیخ:50 گرام۔ تمام دوائیں ہم وزن لے کر پیس لیجئے۔ صبح و شام ایک ایک چمّچ (اندازاًچھ۔چھ گرام) پانی سےاستعمال کیجئے۔

اِنْ شَآءَ اللہ عَزَّ وَجَلَّ جوڑوں، کمر، ہاتھ اور پَیر کے ہر طرح کے درد میں مفید ہوگا۔ مدّتِ استعمال:تا حصولِ شِفا۔مختلِف قسم کی دردکُش ادویات کے بجائے طبیب کے مَشْورے سے اس نسخے کا استعمال فرمائیں۔روزانہ چار کپ سبز چائے پئیں۔ہَلْدی کا آدھا چائے کاچمچ کھا نے پر چھڑک کر روزانہ کھائیں۔کیلشیم سے بھرپور غِذائیں مثلا ً دودھ یا اس سے بنی مصنوعات، لوکی یعنی کدو شریف، ٹنڈےاور توری وغیرہ سبزیاں استعمال فرمائیں۔ روزانہ 10 سے 15 منٹ دھوپ میں بیٹھیں۔کھلی فضا میں ننگے پاؤں چِہِل قدمی کریں۔ مچھلی کے تیل سے بنے کیپسول استعمال کریں۔جوڑوں کے مریض کے لئے نقصان دہ چیزیں گیس پیدا کرنے والی اور بادی چیزیں جیسے آلو، گوبھی، اروی، مٹر، بینگن، چنے کی دال، کلیجی، پائے، بڑا گوشت، دال ماش، بہت ٹھنڈا پانی اور چاول وغیرہ جوڑوں کے درد کے مریض استعمال نہ کریں۔جوڑوں کےدردکےلئےبہترین مساج آئل قُسْطْ تَلْخْ:25 گرام،رتن جوت:12گرام،ست اَجْوَائن: 10گرام، تِل کا تیل:250گرام،قسط تلخ اور رَتَنْ جَوْت کو موٹا موٹا کوٹ کر تِل کے تیل میں چند منٹ پکائیں۔جب یہ دونوں کچھ براؤن ہوجائیں تو چولہے سے اتار لیں اور کپڑے سے چھان کر ست اجوائن باریک کرکے تیل میں شامل کرلیں۔ دن میں دو بار اس تیل کے ذریعے ہلکے ہاتھ سے درد کے مقام پر مَساج کریں۔ اِنْ شَآءَ اللہ عَزَّ وَجَلَّ ہر طرح کے درد کے لئے مفید ہے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *